Rooh Ka Sakoon Episode 2


 او مسٹر اگر ذرا سا میں نے آپ کے ہاتھ کو زخمی کردیا ہے تو کیا ہوگیا۔ پہلی دفعہ سفر کررہی ہوں گھر والوں کے بغیر, اکیلے میں تو دڑ لگنا تو واجب ہے            

مجھ پہ اگر پھر بھی زور سے لگ گیا ہے تو میں معزرت چاہتی ہوں “۔
ملائکا نے آنے والے وقت کے بارے میں سوچتے ہوۓ ِاس مغرور بادشاہ سے نہ لڑنا بہتر سمجھا کیوں کے یہ کنیکٹنگ فلائیٹ تھی اور آگے جاکے پھر جہاز نے لینڈنگ اور ٹیک آف کرنا تھا ۔”نہیں نہیں”۔ملائکا نے سوچتے ہوۓ ُجھرجھری سی لی ۔
“کوئ بات نہیں اب دیھان سے بیٹھنا اور مجھے ہاتھ مت لگانا “۔یہ کہ کے اوزکان نے پاس پڑا میگزین ُاٹھالیا۔
“آیا بڑا مجھے ہاتھ مت لگانا میں تو جیسے مری جارہی ہوں نہ “ملائکا نے آہستہ آواز میں خود سے بڑبڑاتے ہوۓ کہا ۔
“مجھ سے کچھ کہا”۔اوزکان نے اپنے چہرے سے میگیزین تھوڑا پیچھے سرکاتے ہوۓاپنی ایک آئ برو ُاچکائ ۔ملائکا نے نہ میں سر ہلایا جس سے ُاس کے چہرے پہ اسٹیپ کٹنگ سے نکلتے بال جو ُاس کے سر ہلانے پر ُاس کے چہرے پہ سایہ فگن ہوگۓتھے,اس کی  معصومیت سے بھرے چہرےکو دیکھ کے اوزکان کی ایک ِبیٹ ِمس ہوئی تھی۔
               ۞۞۞۞۞۞۞۞۞۞۞۞

Hello sir would you like to eat vegetable sandwiches or chicken sandwiches .
“ہیلو سر کیا آپ  سبزی کا سینڈوچ یا چکن کا سینڈوچ کھانا پسند کرے گے”۔ایئرہوسٹس نے آکے اوزکان سے پہلے پوچھا ۔

No i dont want.
نہیں مجھے نہیں چاہیے۔اوزکان نے سر نہ میں ہلایا 
and you mam.
اور محترمہ آپ ۔

I will have the chicken sandwich.
میں چکن سینڈوچ کھانا چاہوگی 
Mam open the table.
میم ٹیبل کو کھولے۔ائیرہوسٹس کے کہنے پہ ملائکا نے ُاس کی نشاندہی پراپنے سامنے دیکھا مگر ُاسے سمجھ نہیں آیا کے ٹیبل کہا ہے یہ نہیں کے وہ کوئ گوار تھی بس کہتے ہے نہ قسمت خراب ہو تو بے عزتی ہونے کو کوئ نہیں روک سکتا وہ بھی اتنے ہینڈسم  لڑکے کے سامنے ملائکا تھوڑا بوکھلا گئ تھی, ملائکا ونڈو والی سیٹ پہ بیٹھی تھی جب کے اوزکان بیچ میں اور انکل سائیڈ پر اس وجہ سے ائیر ہوسٹس آگے نہیں ہوسکتی تھی, آوزکان نے بنا ُاسے شرمندہ کراۓ ائیر ہوسٹس سے اپنے سینڈوچ کا تکازا کرلیا پھر ملائکا کوِدکھانے کے لیے اپنا ٹیبل کھولا جسے دیکھتے ہوے ملائکا نے اپناٹیبل بھی آسانی سے کھول لیا۔
پھر اوزکان نے پہلے ملائکا کو دیا پھر اپنی ٹیبل پر رکھادیا

Sir any thing to drink? .airhostess asked
ya diet coke !ozkan said
and mam you? .airhostess asked
I want a sprite.malaika said
Here you go.airhostess said
اوزکان نے ملائکہ  کی ُسریلی آواز ُسن کے اپنی مسکراہٹ  گھنی منچھوں تلے ُچھپالی پھر سپرائٹ ائیر ہوسٹس سے لے کر ملائکا کی ٹیبل پہ رکھ دی ۔
ملائکا نے دو منٹ میں اپنا سینڈوچ ختم کرلیا مگر اوزکان کو دیکھا جو ہاتھ میں ڈائیٹ کوک تھامے پی رہا تھا ۔


“آپ سینڈوچ کیوں نہیں کھارہے”۔ملائکا نے ُاس کی ٹرے کی طرف نظر دوڑاتے ہوۓ پوچھا ۔
ویسے ہی میرا موڈ نہیں”۔اوزکان نے گلاس لبوں سے لگاۓ اپنے چہرے پہ آنے والی مسکراہٹ کو ُچھپالیا۔
اچھا ,اللہ تو بہت ناراض ہوگے کے آپ نے رزق کی بے ادبی کی ہے  
اوزکان نے ُاس کے چہرے کی طرف دیکھا جہاں جگہ جگہ کیچپ لگی ہوئ تھی اوزکان جیسے سخت آدمی کے چہرے پہ مسکراہٹ چھاگئ۔
“اپنا چہرہ صاف کرو”۔اوزکان کی گھمبیر آواز نے سینڈوچ کھاتی ملائکا کو چونکا دیا۔
“ہاں”۔ملائکا نے اسے دیکھا 
“اپنا چہرہ صاف کرو کیچپ لگی ہے “۔اوزکان کی نشاندہی پر ملائکا نےاپنا چہرہ صاف کیا پھر سارے سفر میں ملائکا نے اوزکان کو تنگ نہیں کیا, قطرائرپورٹ پر لینڈنگ کی اناؤنسمنٹ ُسن کے ملائکا پہ ایک بار پھر خوف کے بادل چھانے لگےِاس سے پہلے ملائکااوزکان کے ساتھ پہلے والا سلوک پھر کرتی اوزکان نے خودبنا  ُاس کی طرف دیکھےُاس کا ہاتھ تھام لیا اور ِسیٹ کے ساتھ سر ٹکاۓ  آنکھیں موندے کہا۔


About admin

Check Also

Thirst of Billionaire episode 2

 Shaukat finally confessed, feeling burdened by their mistreatment. “I’ve seen them,” he said. “But it’s …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *