Rooh Ka Sakoon Episode 1

وہ جہاز کی ِسیٹ پہ آنکھیں موندے اماں اور سنعایا کو یاد کررہی تھی, کیسے گزارو گی میں یہ دو سال آپ دونوں کے بغیر اماں ,میں بہت جلد اپنی پڑھائ مکمل کرکے آپ کے پاس لوٹوگی جبھی کوئ خوشبوؤں سے بھرا وجود ُاس کے برابر میں آکر بیٹھا جو بڑی محویت سے اس ایشین بیوٹی کو دیکھ رہاتھا جو آنکھیں موندے لرزتی پلکوں کے ساتھ اپنے آپ سے کچھ بڑبڑا رہی تھی کچھ لمحوں کے لیےاوزکان صالح کے چہرے پہ ایک جاندار ُمسکراہٹ چھا گئ ُاس نے اپنے گہرے کتھئ بالوں کو ہاتھوں سے سنوارا اور پھر سامنے کھڑی ائیر ہوسٹس کی طرف متوجہ ہوگیا جو جہاز میں 



بیٹھنے کے دوران یدایت دے رہی تھی ۔کچھ دیر بعد جیسے ہی طیارہ ٹیک اوف کرنے لگا ملائکا نے اپنے برابر میں بیٹھے اوزکان صالح کا ہاتھ زور سے پکڑ لیا اور منہ زبانی قرآن پاک کی آیات کا ورد کرنے لگی ۔جس پہ اوزکان جس نے اپنا بایا ہاتھ کی شہادت کی ُانگلی اپنی گھنی منچھو  کے اوپر رکھی ہوئ تھی جب کے باقی انگلیاں ہونٹوں کے نیچے رکھے ہوۓ کہنی ِسیٹ پہ ٹکاۓ اس ماورائ ُحسن کی ملکہ کو دیکھ رہا تھا جو نیلی جینز پہ سفید ٹی شرٹ اور پنک کوٹ پہنے خوف کھارہی تھی  جہاز جیسے ہی ہوا میں ُاڑا ملائکہ  نے اپنے ناخن اوزکان کے ہاتھ میں پیوست کردیۓ جس پر اوزکان نے جو ُاس کی حرکتوں کو ُاس کے خوف کی وجہ سے نظر انداز  کر رہاتھا ناخن لگنے پر بلبلا ُاٹھا۔

hey wild cat look what have you done ?
ملائکا نے اپنی حسین بند آنکھیں کھولی جن پر خوبصورت گھنی پلکوں کا پردہ تھا, پردہ ُاٹھنے پر ہیزل گرین آنکھوں نے جب چونک کے اوزکان صالیح کو دیکھا تو کچھ پل کے لیے ازکان صالیح بھی مسمرائز ہوگیا۔
“وایلڈ کیٹ کسے بولا آپ نے “۔ملائکا نے خالص انگلش میں ِاس مغرور بادشاہ کو دیکھتے ہوۓ سوال کیا جس کے چہرے پہ متوجہ کرنے والی ُاس کی آنکھیں جس کا رنگ ُبھورا تھا جو ُاس کے چہرے پہ چھائ مغروریت کو چار چاند لگارہے تھے ۔اوزکان صالیح ُاس کی مترنم آواز ُسن کے سر کو ُجھکا گیا, پھر سر ِسیٹ کے ساتھ واپس لگا کے  اپنے باۓ ہاتھ کی شہادت کی ُانگلی کو اپنے ماتھے پر رکھے اور انگھوٹے کو اپنے سخت بھینچے ہوۓ جبڑے پہ رکھے جس سے ُاس کے براؤن اور کالےلیڈر کے کئ سارے بریسیلیٹز گہرے نیلے رنگ کے کوٹ میں سے جھلکنے لگے,اوزکان نے اپناُرخ ملائکا کی جانب کیا جو ُاسے اپنی مسمرائز کردینے والی آنکھوں سے دیکھ رہی تھی, اوزکان کے چہرے پہ مسکراہٹ چھاگئ جس سے ُاس کی ایک گال پہ پڑتا ڈمپل ُاف۔ملائکا کو اپنی چھا جانے والی شخصیت سے صحرانگیز کرگیا۔

ظاہر سی بات ہے میرے اور آپ کے علاوہ تیسری ِسیٹ پہ وہ انکل ہے تو وایلڈ کیٹ آپ ہی ہوئ,یہ دیکھے اپنے کارنامے جہاز کے ٹیک آف کے وقت آپ کے ان تیز دھار والے ناخنوں نے میرے ہاتھ کا کیا حشر کیا ہے “۔ُاس نے ملائکا کو انگلش میں جواب دیا۔اوزکان کے نشاندہی کرنے پہ ملائکا دل ہی دل میں شرمندہ ہوئ پر اپنی لڑاکا عادت سے مجبور ُاس پہ چڑدوڑی ۔


About admin

Check Also

Thirst of Billionaire episode 2

 Shaukat finally confessed, feeling burdened by their mistreatment. “I’ve seen them,” he said. “But it’s …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *