MOMINA EPISODE 6

Table of Contents

 صحیح تو کہا ہے وہ گاڑی والا ہے نہ جو سفید کرولا      میں ہے ِاس کا مطلب گاڑی        ہےتو وہ امیر بھی ہوگا۔

       اور امیر ہوگا تو مومی کی مشکللیں بھی حل کردے گا, یااللہ یہ گاڑی والا کوئ ہینڈسم  سا لڑکا ہو جو مجھے دیکھ کر پہلی بار میں ہی فریقہ ہوجاۓ “۔مومنا نے آسمان کی طرف دیکھتے ہوۓ دعا مانگی جو ِاس وقت قبولیت کی گھڑیوں میں سے تھا                                                   ۔

مومی آج طبیعت تو ٹھیک ہے نہ یہ کیسی واحیات باتیں کر رہی ہو تم اب اگر ایک بھی بار ایسی فضول بات کی تو  میں حرم آپو کو بتادو گی سمجھی ۔فلک نے مومی کو دھمکی دی۔                                                         ۔

                                    

 مومی اور فلک بس اسٹاپ کے نزدیک بس کا انتظار کرنے لگی جب ہی مومنا کی نظروں نے ُاس کرولا والے کو تلاشا جس کی گاڑی کے شیشے کالے تھے ۔ ُاسے قریب شیشے کی دکان کے نزدیک وہ سفید کرولا نظر آگئ۔مومنا کے چہرے پہ کچھ پالینے کی جستجو چھاگئ ۔”اکیلے اکیلے کیوں ُمسکرایا جارہا ہے ہمیں بھی تو پتہ چلے “۔فلک نے مومی کو ٹہوکا دیتے ہوۓ پوچھا ۔

“کچھ نہیں “۔یہ کہ کے وہ اپنی مطلوبہ بس میں سوار ہوگئ۔گھر کے نزدیک بس اسٹاپ پہ جب یہ دونوں ُاتری تو مومنا نے غیر محسوس انداز میں ایک بار پھر پلٹ کر دیکھا شاید قسمت ُاس پر مہربان ہو اور وہ گاڑی والا مجھے گھر تک چھوڑنے آیا ہو۔

آہ ہ ہ ایسی قسمت کہا تیری مومنا “۔مومی نے جب پلٹ کر دیکھا تو ُاس کی نظریں مانو ساکت ہوگئ کیوں کے وہی سفید کرولا والا ُان کا پیچھا کرتاہوا گھر تک آگیا تھا ۔
“فلک فلک”۔
“کیا ہوا کیا بچو جیسی حرکتیں کررہی یے سڑک پر اباں نے دیکھ لیا نا تو ہم دونوں ِپیٹے گی “۔فلک نے ُاس کے خوشی سے تمتاتے ہوۓ چہرے کو دیکھا ۔
“فلک وہ گاڑی والا ہمارے پیچھے گھر تک آگیا وہ پیچھے دیکھ “۔مومنا نے پیچھے پلٹ کر نشاندہی کی۔

ہاۓ اللہ سچ میں, مجھے تو ڈر لگ رہا ہے مومی جلدی جلدی چل کہی ہمیں اغواں نہ کرلے “۔فلک نے مومنا کا ہاتھ کھینچتے ہوۓ کہا جو سڑک پر ایسے چل رہی تھی مانو کسی ریاست کی ملکہ ہو ۔
“چل ہٹ میں کیوں جلدی جاؤں اور تو اچھی بات نہیں کرسکتی تو ُبری بات بھی مت کر, اچھا اچھا بول سمجھی ہوسکتا ہے وہ تیرے مستقبل کے بہنوئ ہو “۔

About admin

Check Also

Thirst of Billionaire episode 2

 Shaukat finally confessed, feeling burdened by their mistreatment. “I’ve seen them,” he said. “But it’s …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *